ایک شعر

ٹوٹے پھوٹے فقروں کے جنگل میں رہتی ہوں ہواوں سے لڑتے ،اچھلتے بھنور میں رہتی ہوں ڈوب کر ، ابھر … More